Speeches In Ramandan
November 8, 2017
Munazarah
November 8, 2017

Hamd & Naat

مایوس مت ہو اے دل

اللہ ایک ہی ہے اور ہے الہ سب کا

محمدﷺ پر ہیں خاص و عام صدقے

مایوس مت ہو اے دل دست دعا اٹھا کر

جو مانگا ہے جو مانگیں گے خدا سے ہم وہی لیں گے

خوب لوں بھر بھر کے اپنا آج دامانِ امید

کیوں نہ تجھ سے کہوں میں حالِ دل

مایوس مت ہو اے دل دست دعا اٹھا کر

سر جو رکھا ہے ترے در پہ خبر ہوگی ضروری

الہی ہم ترے آگے یہ دو فریاد لائے ہیں

گل مقصود سے دامن کو بھر دے

ضبط کیوں کر یہ اب فغاں ہووے

باب رحمت

آج تیری بے قراری رنگ لائے گی ضرور

آپ پر لاکھوں سلام

الحمد للہ

اللہ اکبر اللہ اکبر

فقیروں کی صورت ادا کر رہے ہیں

ہے باب یہ کرم کا خالی نہ پھیر یا رب

ہے کمی کس بات کی تیرے یہاں تو ہے غنی

وہ ہیں پیمبر تا روز محشر

ہم ہیں بندے ترے آگے ترے سر رکھتے ہیں

جو عیب قسمت کے ہیں مٹادے ترا ہی عالم میں نام ہوگا

جو مانگا ہے جو مانگیں گے، خدا سے ہم وہی لیں گے

کون سا در ہے نہ جس در سے کوئی خالی پھرا

لا الہ الا اللہ

مایوس تو مجھ کو نہ کر مشہور یے تیرا کرم

محمدﷺ پر ہیں خاص و عام صدقے

نہ جانے دعاؤں کو کیا ہو گیا ہے

سلام اس پر جو بن کر رحمة للعالمین آیا

سر جو رکھا ہے ترے در پر خبر ہو گی ضرور

تری حمد مجھ سے ہو کیا بیاں تری شان جل جلالہ

یہ شان دیکھی تری نرالی جو مانگے تجھ سے تو اس سے راضی